• جامعة دارالتقوی لاہور، پاکستان
  • دارالافتاء اوقات : صبح آ ٹھ تا عشاء

روزے کی حالت میں دواعی جماع کی وجہ سے انزال کا حکم

استفتاء

کیا فرماتے ہیں مفتیان کرام اس مسئلہ کے بارے میں کہ آج میں سحری کے بعد اپنی اہلیہ کے ساتھ مشغول تھا، بوس وکنار کر رہا تھا، اسی حالت میں میری منی خارج ہو گئی۔ کیا اس سے میرا روزہ ٹوٹ گیا؟ اور صرف قضا کرنی پڑے گی یا کفارہ بھی دینا ہو گا؟ بوس کنار کرتے وقت ہوئے دونوں نے کپڑے پہنے ہوئے تھے۔

الجواب :بسم اللہ حامداًومصلیاً

مذکورہ صورت میں روزہ ٹوٹ گیا، اور صرف قضاء واجب ہو گی، کفارہ واجب نہیں ہو گا۔

فتاویٰ عالمگیری (1/204) میں ہے:

وإذا قبل امرأته وأنزل فسد صومه من غير كفارة.

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ فقط و اللہ تعالیٰ اعلم

Share This:

© Copyright 2024, All Rights Reserved