• جامعة دارالتقوی لاہور، پاکستان
  • دارالافتاء اوقات : صبح آ ٹھ تا عشاء

گانا گاتے گاتے یاد آنے پر تلاوت شروع کر دینا

استفتاء

ایک بندہ بائیک چلاتے ہوئے گانا گاتا ہے اچانک یاد آنے پر وہ اللہ کا کلام پڑھنا شروع کر دیتا ہے۔ یہ کیسا عمل ہے؟ میرا مطلب گانے کے بعد اللہ کا کلام کہیں گناہ کا مرتکب تو نہیں ہو رہا؟

الجواب :بسم اللہ حامداًومصلیاً

گانا گانا گناہ کا کام ہے اور یاد آنے پر اللہ کا کلام پڑھنا اور گانے کو ترک کر دینا یہ ثواب اور نیکی  کا کام ہے۔

سورہ ہود (آیت: 114) میں ہے:

إن الحسنات يذهبن السيئات.

الاتقان فی علوم القرآن: (2/414)

6510 – وأخرج الطبراني بسند ضعيف عن ابن عباس عن النبي لم أر شيئا احسن طلبا ولا أسرع إدراكا من حسنة حديثة لسيئة قديمة إن الحسنات يذهبن السيئات.

الاتقان فی علوم القرآن: (2/515)، مسند احمد : (35/386) میں ہے:

6511 – وأخرج أحمد عن أبي ذر قال قلت يا رسول الله أوصني قال إذا عملت سيئة فأتبعها حسنة تمحها قلت يا رسول الله أمن الحسنات لا إله إلا الله قال هي أفضل الحسنات.

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ فقط و اللہ تعالیٰ اعلم

Share This:

© Copyright 2024, All Rights Reserved