• جامعة دارالتقوی لاہور، پاکستان
  • دارالافتاء اوقات : صبح آ ٹھ تا عشاء

اہل تشیع کی غلط باتیں

استفتاء

1۔ قرآن کریم کو اکٹھا کرنے کے دوران حضرت ابوبکر و عمر رضی اللہ عنہما نے اس میں تحریف کی ، نیز حضرت ابو بکر رضی اللہ عنہ کی بکری قرآن کریم کا کچھ حصہ کھا گئی ،حضرت علی کی خلافت بلا فصل کے بارے میں آیات تھیں ،حذف کی گئیں۔ کیا قراان کریم کے بارے میں ایسا عقیدہ رکھنا درست ہے ؟ اور کیا یہ حقائق ہیں کہ حضرت ابوبکر و عمر رضی اللہ عنہما نے ایسا کیا؟

2۔ اہل سنت کا کلمہ لاالہ الا اللہ محمد رسول اللہ پورا لکھا ہوا قرآن میں کہیں نہیں ہے ،اس لیے لاالہ الا اللہ محمد رسول اللہ ،علی ولی اللہ وصی رسول اللہ وخلیفۃ بلا فصل کہنے میں بھی حرج نہیں ۔کیا ایسے کلمہ کا عقیدہ رکھنے والا مسلمانوں کا ایک فرقہ کہلائے گا ؟اور کیالاالہ الا اللہ محمد رسول اللہ مختصر اس لیے بتایا گیا کہ امت بڑا کلمہ یاد نہیں رکھاسکے گی ؟

3۔ ہم اللہ کے بعد حضرت علی کو کلہم  سمجھتے ہیں ،اس لیے مولا علی کہتے ہیں ،کیا والد صاحب کو راضی رکھنے کے یے یہ عقائد رکھ سکتا ہوں؟

الجواب :بسم اللہ حامداًومصلیاً

مذکورہ باتیں اہل تشیع کی ہیں جو حقیقت کے خلاف ہیں لہذا اہل سنت کو ایسا عقیدہ رکھنا جائز نہیں ۔ باقی رہی اہل تشیع کی بات ، تو ان کی تو بنیاد ہی ایسی باتوں پر ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔  ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔فقط واللہ تعالی اعلم

Share This:

© Copyright 2024, All Rights Reserved